صبح طیبہ میں ہوئی بٹتا ہے باڑا نور کا

صبح طیبہ میں ہوئی بٹتا ہے باڑا نور کا قصیدہ نور صبح طیبہ میں ہوئی بٹتا ہے باڑا نور کا صدقہ لینے نور کا آیا ہے تارا نورکا   باغ طیبہ میں سہانا پھول پھولا نور کا مست بوہیں بلبلیں پڑھتی ہیں -کلمہ نور کا   بارھویں کے چاند کا مجرا ہے سجدہ نور کا …

صبح طیبہ میں ہوئی بٹتا ہے باڑا نور کا Read More »