سرور کہوں کے مالک و مولیٰ کہوں تجھے

سرور کہوں کے مالک و مولیٰ کہوں تجھے سرور کہوں کے مالک و مولیٰ کہوں تجھے باغِ خلیل کا گل زیبا کہوں تجھے حرماں نصیب ہوں تجھے امید کہ کہوں جان مراد– و کان تمنا کہوں تجھے گلزار قدس کا گل رنگیں ادا کہوں درمان درد بلبل شیدا کہوں تجھے صبح وطن پہ شام غریباں …

سرور کہوں کے مالک و مولیٰ کہوں تجھے Read More »